ٹام ٹام نے ہواوے سے معاہدہ بند کردیا


ایمسٹرڈم: ڈچ نیویگیشن اور ڈیجیٹل میپنگ کمپنی ٹام ٹام نے جمعہ کے روز کہا کہ اس نے اسمارٹ فون ایپس میں اپنے نقشوں اور خدمات کے استعمال کے ل چین کی ہواوائی ٹیکنالوجیز کے ساتھ معاہدہ بند کردیا ہے۔  
گذشتہ سال امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کی جانب سے قومی سلامتی کے خدشات کے پیش نظر اسے مؤثر طریقے سے بلیک لسٹ کرنے کے بعد ہواوے کو اسمارٹ فونز کے لئے اپنا آپریٹنگ سسٹم تیار کرنے پر مجبور کیا گیا تھا۔
اس نے ہواوے پر گوگل کے سرکاری اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم کے ساتھ ساتھ بڑے پیمانے پر استعمال شدہ ایپس جیسے گوگل میپس کو نئے فونز میں استعمال کرنے پر پابندی عائد کردی۔

ٹام ٹام کے ساتھ معاہدے کا مطلب ہے کہ ہواوے اب اپنے اسمارٹ فونز کے ایپس تیار کرنے کے لئے ڈچ کمپنی کے نقشے ، ٹریفک کی معلومات اور نیویگیشن سافٹ ویئر استعمال کرسکتا ہے۔
ٹام ٹام کے ترجمان ریمکو میرسٹرا نے کہا ہے کہ یہ معاہدہ کچھ عرصہ پہلے بند کردیا گیا تھا لیکن کمپنی کے ذریعہ اسے عوامی نہیں کیا گیا تھا۔
میرسٹرا نے معاہدے کی مزید تفصیلات فراہم کرنے سے انکار کردیا۔
ٹام ٹام ، جو سافٹ ویئر خدمات پیش کرنے کے لئے آلہ فروخت کرنے سے دور ہورہا ہے ، نے اپنے ٹیلی میٹرک ڈویژن کو جاپان کے برجسٹون کو اپنے ڈیجیٹل نقشہ سے منسلک کاروبار پر توجہ دینے کے لئے گذشتہ سال بیچ دیا۔